نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت ہمارے لئے مشعل راہ ہے،دردانہ صدیقی

citytv.pk

کراچی(سٹی ٹی وی پاکستان) نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔ آپ کے اسوہئ حسنہ پر عمل ہی دنیا اور آخرت میں کامیابی کا ضامن ہے۔صرف 12 ربیع الاول کا دن ہی نہیں بلکہ پورا سال اتباع رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے لئے ہے۔ان خیالات کا اظہار حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان کی سیکریٹری جنرل دردانہ صدیقی نے ضلع غربی کے تحت ہونے والی سیرت النبی صہ کانفرنس سے خطاب میں کیا۔انہوں نے کہا کہ ہمیں صحابہ کرام رسول اللہ اجمعین کی زندگی سے پتہ چلتا ہے کہ دراصل اتباع رسول کیا ہے، وہ ہر اس کام پر عمل کرنے کی کوشش کرتے جو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے کیا ہوتا چاہے اس کو کرنے کا باقاعدہ حکم آپ صہ نے نہ دیا ہوتا۔

ہمیں بھی نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا اتباع اپنی زندگی کے ہر گوشے میں کرنا ہے اسی میں ہماری دنیاوی اور اخروی نجات پوشیدہ ہے۔نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا سب سے بڑا کارنامہ یہ ہے کہ انہوں نے ایمان کو اخلاق سے اور اخلاق کو عملی زندگی سے جوڑ دیا۔دردانہ صدیقی نے کہا کہ یہ اللہ تعالی کا بہت بڑا احسان ہے کہ اس نے ہمیں خاتم النبین حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کا امتی ہونے کا شرف بخشا۔آپ صہ کو تمام جہانوں کے لئے رحمت بنا کر مبعوث فرمایا۔ حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے محبت ہر مسلمان کے ایمان کا حصہ ہے۔

citytv.pk

citytv.pk

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے محبت کا تقاضہ یہ ہے کہ ان کی سوچ، فکر اور مشن کو آگے بڑھایا جائے۔اللہ تعالیٰ نے اپنے حبیب صلی اللہ علیہ وسلم کو مقام محمود پر فائز کیا اور اپنے نام کے ساتھ نبی کریم صلی وسلم کے نام کو کلمہ کا حصہ بنا کر قیامت تک کے لئے اس ذکر کو اکٹھا کر دیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے  مساوات، بھائی چارہ اور عدل و انصاف پر مبنی معاشرہ تشکیل دیا اور رنگ و نسل، خاندان، زبان اور وطن سے بالاتر ہو کر ایک امت و ملت کا قیام عمل میں لائے۔ موجودہ دور میں امت مسلمہ کو درپیش مسائل بالخصوص معاشرے میں پایا جانے والا انتشار، نفاق،ظلم اور نا انصافی کا حل سیرت طیبہ میں موجود ہے۔

دردانہ صدیقی نے کہا کہ آپ کے وضع کردہ معاشی و معاشرتی اصول، عالمی امن اور عدل و انصاف کے لئے رہنما ہیں امت مسلمہ پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ ہم اسلام کے عالمگیر آفاقی نظام کو دنیا کو درپیش چیلنجز کے سامنے بطور حل پیش کریں کیونکہ آپ ہر مذہب، فرقہ اور قوم کے لئے رحمت اللعالمین ہیں۔ ہماری نجات کا واحد حل تعلیمات نبوی صہ کی طرف واپس پلٹ جانے اور اس پر عمل کرنے میں ہے۔ بعد ازاں ناظمہ ضلع غربی ارجمند نے بھی خطاب کیا

اپنی رائے کا اظہار کریں