اسلامی طرز تعمیر کا شاہکار

citytv.pk

 

ملائیشیا کی صنعتی ترقی کی علامت پیٹروناس ٹاورز کو 1996ء میں دنیا کی بلند ترین عمارت کا اعزاز حاصل ہوا۔ اس سے قبل یہ اعزاز امریکہ کے پاس تھا۔ گزشتہ100سالوں میں پہلی بار یہ اعزاز امریکہ کے علاوہ کسی اور ملک کو حاصل ہوا تھا۔ جنوب مشرقی ایشیا کے ملک ملائیشیا کی1483فٹ بلند یہ عمارت شکا گو کے سیزر ٹاور سے بھی 33 فٹ بلند ہے۔

ملائیشیا کے دارالحکومت کوالالمپور میں ایک سابق ریس ٹریک پر ملائیشیا کی قومی پٹرولیم کارپوریشن کے تعمیر کردہ پیٹروناس ٹاورز اسلامی طرز تعمیر اور اس کی اقتصادی خوشحالی کا عکس پیش کرتے ہیں۔80لاکھ مربع فٹ زمین پر قائم ان ٹاورز میں دفاتر، شاپنگ سینٹرز اور تفریح کی جدید سہولیات موجود ہیں۔

 

انڈر گراؤنڈ پارکنگ میں 4500 گاڑیاں کھڑی کرنے کی گنجائش ہے۔ پیٹرولیم میوزیم، مسجد اورملٹی میڈیا کانفرنس سینٹر بھی اس عمارت کا حصہ ہے۔
پیٹروناس ٹاورز ایک آٹھ کونوں والے ستارے کی شکل میں تیار بنیاد کے اوپر ستارے کی شکل میں ہی بلند ہوتے ہیں۔ اصل ابتدائی ڈیزائن میں ایک بارہ کونوں والے ستارے سے مشابہ شکل بنائی گئی تھی۔ ملائیشیا کے سابق وزیراعظم ڈاکٹرمہاتیر محمد جنہوں نے ان ٹاورز کی تعمیر اور ڈیزائن میں ذاتی دلچسپی لی

 

ان کی تجویز پر اسے آٹھ کونوں والے ستارے کی شکل میں تیارکیا گیا کیونکہ یہ ایک اسلامی علامت تھی ۔ 88منزلہ دونوں ٹاورز کو 42ویں منزل پر ایک لچکدار سکائی برج کے ذریعے آپس میں ملایا گیا ہے۔ ان دونوں ٹاورز کو ”کائناتی ستون‘‘ کا نام بھی دیا جاتا ہے جو نیچے سے دیکھیں تو آسمان کو چھوتے ہوئے نظر آتے ہیں۔ یہ ٹاورز اسلامی فن تعمیر سے مخصوص جیومیٹری کے اصولوں کو استعمال کرتے ہوئے قوت اور وقار کی علامت کے طور پر ڈیزائن کئے گئے جن میں شیشے اور سٹیل کا کثر ت سے استعمال کیا گیا۔

ان ٹاورز کی تکمیل1996ء میں ہوئی، اپریل1996ء میں اس عمارت کا افتتاح نہایت دھوم دھام سے کیا گیا۔ جس میں ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ 15 اپریل 1996ء کو یہ دنیا کی اس وقت کی بلند ترین عمارت قرار پائی۔ 1997ء میں یہاں باقاعدہ کام اور کاروبار کا آغاز ہوا۔ پہلے ٹاور میں ملائیشیا کی مشہور پیڑولیم کمپنی پیٹروناس کے دفاتر ہیں اور دوسرے ٹاور میں پیڑوناس کی ایسوسی ایٹ کمپنی کے دفاتر ہیں جبکہ باقی منزلیں مختلف ملٹی نیشنل کمپنیوں کو لیز پر دی گئی ہیں۔

پیٹروناس ٹاورز کو 15اپریل1996ء سے 17اکتوبر2003ء تک دنیا کی بلند ترین عمارت کا اعزاز حاصل رہا۔پھر تائیوان میں1676فٹ بلند ”تائی پہیہ101‘‘ ( فنانشل سینٹر) بلند ترین عمارت بن گیا۔ پیٹروناس ٹاورز کے بارے میں دلچسپ حقائق بھی ہیں۔ ہالی ووڈ کی ایک مقبول فلم”Entrapment‘‘میں ان ٹاورز کی عکس بندی سے انہیں عالمی شہرت ملی۔

ان جڑواں ٹاورز میں 36.910ٹن سٹیل استعمال کیا گیا جن کا مجموعی وزن تین ہزارہاتھیوں کے وزن سے زیادہ ہے۔ دونوں ٹاورز میں 32ہزار کھڑکیاں ہیں جنہیں ایک وفعہ صاف کرنے میں پورا ایک مہینہ لگ جاتا ہے۔

 

 

اپنی رائے کا اظہار کریں