ساہیوال ڈویژن میں کسانوں کو کھاد کی دستیابی میں کوئی قلت نہیں۔کمشنر علی بہادر قاضی

citytv.pk

ساہیوال ڈویژن میں کسانوں کو کھاد کی دستیابی میں کوئی قلت نہیں۔کمشنر علی بہادر قاضی
انتظامیہ چھوٹے کسانوں کے مفادات کے تحفظ کے لئے قیمتوں کی کڑی نگرانی کر رہی ہے۔کمشنر
ساہیوال ڈویژن میں اب تک 1473انسپکشنز کر کے 90مقدمات درج کروائے گئے اور 45گوداموں کو سیل کیا گیا۔
کھادکی ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف 26لاکھ96ہزار روپے جرمانہ بھی کیا گیا ہے۔علی بہادر قاضی
کمشنر آفس میں کھاد اور روزمرہ اشیاء کی قیمتوں کا کمشنر علی بہادر قاضی کی زیر صدارت جائزہ اجلاس کا انعقاد۔
کرشنگ سیزن شروع ہونے کے بعد ڈویژن بھر میں چینی کی قیمتوں میں واضح کمی آئی ہے۔کمشنر علی بہادر قاضی
ڈیجیٹل گرداوری کے کام کو بھی تیز کر کے اسے اگلے ماہ مکمل کیا جائے۔کمشنر کی ہدایت

ساہیوال (ارشد سردار چودھری )کمشنر ساہیوال ڈویژن علی بہادر قاضی نے کہا ہے کہ کسانوں کو بروقت کھادوں کی دستیابی انتظامیہ کی اولین ترجیح ہے اور روزانہ کی بنیاد پر ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کاروائیاں جاری ہیں جن سے ڈویژن میں ہر جگہ کھاد دستیاب ہے۔ انہوں نے یہ بات اپنے دفتر میں کھاد کی دستیابی اور ضروری اشیاء صرف کی قیمتوں کے حوالے سے ہونے والے ہفتہ وار اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں ڈپٹی کمشنرزواجد علی شاہ، کیپٹن (ر) علی اعجاز، احمر سہیل کیفی، ایڈیشنل کمشنر کوارڈینیشن شفیق احمد ڈوگر، اسسٹنٹ کمشنرریونیو فضائل مدثر اور تینوں اضلاع کے اسسٹنٹ کمشنرز نے شرکت کی۔

اجلاس میں بتایا گیا کہ کھاد کے ذخیرہ اندوزوں کے خلاف جاری مہم میں 13نومبر سے اب تک 1473انسپکشنز کی گئی ہیں جس دوران خلاف ورزی پر 90مقدمات درج کروائے گئے، 45گوداموں کو سیل کیا گیا اور 11دوکانداروں کو گرفتار بھی کیا گیا۔ اس کے علاوہ جاری مہم کے دوران 26لاکھ96ہزار روپے جرمانہ بھی عائد کیا گیا جس میں 12لاکھ93ہزار روپے ضلع ساہیوال، 9لاکھ97ہزار روپے ضلع اوکاڑہ اور 4لاکھ 6ہزار روپے ضلع پاک پتن میں شامل ہیں۔ کمشنر علی بہادر قاضی نے تینوں اضلاع کی انتظامیہ کی کارکردگی کو سراہا اور ہدایت کی کہ کھاد کی ذخیرہ اندوزی کے خلاف مہم روزانہ کی بنیاد پر جاری رکھی جائے۔

انہو ں نے محکمہ زراعت، انتظامیہ اور سپیشل برانچ کی مشترکہ ٹیمیں بنا کر فرضی خریداری کرنے اور مقررہ قیمت سے زائد فروخت کرنے والوں کے خلاف فوری کاروائی کرنے کی ھدایت کی۔ اجلاس میں روزمرہ اشیاء صرف کی قیمتوں کا بھی تفصیلی جائزہ لیا گیا اور بتایا گیا کہ پورے ڈویژن میں ٹماٹر، پیاز اور آلو کی قیمتیں مستحکم ہیں اور ان کی رسد بھی طلب کے مطابق ہے۔ کمشنر علی بہادر قاضی نے کہا کہ کرشنگ سیزن شروع ہونے کے بعد چینی کی قیمتوں میں واضح کمی آئی ہے اور کہیں بھی چینی کی کوئی قلت نہیں۔

انہوں نے صوبے میں جاری ڈیجیٹل گرداوری کے کام کی رفتار مزید تیز کرنے اور دسمبر میں تمام دیہات کی گرداوری مکمل کرنے کی ہدایت کی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں