ارینہ ملٹی میڈیا اورپی سی ایف کے زیر اہتمام سکل سیٹ2020 کا انعقاد رپورٹ: سدرہ امبرین یونس

citytv.pk

عقابی روح جب بیدار ہوتی ہے جوانوں میں
نظر آتی ہے اس کو اپنی منزل آسمانوں میں

 

نوجوان نسل ہی مستقبل کے معمار اور قوم کا قیمتی کا سرمایہ ہیں۔ یہ نوجوان ہی با کردار اور تعلیم سے آراستہ معاشرہ قائم کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ امت کی ترقی انہی نوجوانوں کی ترقی میں پنہاں ہے،اگر ہم قرآن پاک کی رو سے دیکھے تو واضح طور پر اس میں نوجوانوں کے کردار کو اصحاب کہف کے نوجوانوں کے حوالے سے بیان کیا گیا ہے۔ جو وقت کے ظالم حکمران کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر اپنے رب ہر ایمان لے آئے تھے۔ اگر نوجوان اپنی طاقت کو صحیح طور پر استعمال کر نے کی کوشش کریں تو کامیابی زندگی کے ہر میدان میں ان کا مقدر بنے گی اور اگر اسی طاقت میں وہ کو تاہی برتے گے تو یہی کوتاہی ان کے گلے کا پھندا بن جائے گی۔

نوجوانوں کے کامیابی کے سفر کو مزید نکھارنے کے لئے گزشتہ دنوں قدافی اسٹیڈیم ای لائبریری میں ارینہ ملٹی میڈیا اور پی سی ایف کے زیر اہتمام سکل سیٹ 2020 کا انعقاد کیا گیا۔ جس کا مقصد طلباو طالبات میں سکلز کی آگاہی کو فروغ دینا تھا، تاکہ وہ آنے والے سالوں میں اپنی سکلز کو مزید بہتر کرنے کے ساتھ ساتھ مستقبل میں زندگی کے مختلف شعبوں میں آگے بڑھ سکیں۔ اس پر وقار تقریب کا آغاز نعت رسو ل مقبول صلی اللہ علیہ وسلم سے کیا گیا۔ سکل سیٹ 2020 تین سیشن پر محیط تھا۔ پہلا سیشن ہارد سکلز اور دوسرا سیشن سوفٹ سکلز پر مشتمل تھا اور تیسرا اورآخری سیشن میں نوجوان مصنفین کو ایوارڈ ز سے نوازا گیا۔

citytv.pk

citytv.pk

پہلے سیشن میں ارینہ ملٹی میڈیا کے ٹر ینرز نے ایڈوانس سکلز پر گفتگو کی۔شازونہ خرم، عابد ایوب،ضیا فاروقی اور بلال مصطفی نے طلبا کو اپنے تجربے سے مستفید کیا۔ ایڈوانس سکلز کے سیشن میں ٹر ینرز نے نئے آنے والے ڈایزئنرز کو آگے بڑھنے کے لئے بنیادی طریقوں سے آگاہ کیا۔۔ اس کے ساتھ ہی آن لائن مارکیٹنگ کن اصولوں پر کی جائے اوریوٹیوب چینل کے زیادہ سے زیادہ Views کیسے حاصل کئے جائیں جیسی مفید باتوں سے روشناس کروایا۔ سید ثاقب بخاری پہلے سیشن میں نے بطورِ ماڈریٹر کے فرائض سر انجام دئیے۔پہلے سیشن کے اختتام پر مہمانِ گرامی کو شیلڈز سے نوازا گیا۔

دوسرے سیشن میں نے بطورِ ماڈریٹر کے فرائض شہزاد روشن گیلانی نے سر انجام دئیے۔ اس سیشن میں ایک کامیاب زندگی گزارنے کی سکلز کے ساتھ ساتھ لیڈرشپ کی سکلز پر بھی بات کی گئی اس کے علاوہ بچوں میں خوداعتمادی پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ اساتذہ کی تربیت کو بہتر بنانے کے لئے بھی خاص پہلو کو اجاگر کیا گیا۔سیشن کے کی سکلز کے لئے جبران بشیر، رانا عدیل ممتاز، صدف عثمان۔ علی عباس، محمد جعفری اور سیدی عصمت زہرا کو مدعو کیا گیا تھا۔جنہوں نے لائف سکلز پر گفتگو کر نے کے ساتھ طلبا و طالبات کو مستفید کیا۔ دوسرے سیشن کے اختتام پر بھی مہمانِ گرامی کو شیلڈز سے نوازا گیا۔

تیسرے اور آخری سیشن میں نوجوان مصنفین کو ایوارڈ دئیے گئے۔ایوارڈ پانے والوں میں سدرہ امبرین یونس، آغا جرار، آغر ندیم سحر، عبدالسلام چوہدری، فلک زاہد، تحریم امان اللہ، قراۃ العین خالد، فیصل مشتاق، مہوش احسن، سعداللہ جان، صباحت رفیق چیمہ، کبریٰ نوید، انعم کنول، راشد خلیل، مسکان احزم، ربیہ امجد، کنول جان، سمرین زاہد، مسرت ناز اور شانیہ چوہدری شامل تھے۔ ایوارڈ تقریب میں ڈاکٹر فخر عباس، غیاث بابر، خالد ارشاد صوفی، زاہد عباس نقوی اور ندیم سرور جنجوعہ نے بطور مہمانِ گرامی خصوصی شرکت کی۔ ایوارڈ تقریب کی نظامت سلمان چیمہ اور نواید اسلم ملک نے کی۔

سکلز سیٹ کی منعقد کردہ تقریب میں دیا جانے والا ینگ آرتھر ایوارڈ نوجوان مصنفین کے لئے ایک مشعلِ راہ ہے۔ ہمارے ملک میں نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کے لئے ان ایوارڈز تقریبات کا انعقاد ہونا چائیے۔تاکہ وہ اپنے قلمی شعور کی طاقت سے ملک و قوم کی ترقی میں آگے بڑھ کر اپنا مثبت کردار ادا کر سکیں۔ڈیک ٹر ینرز نے نئے آنے والے ڈایزئنرز کو آگے بڑھنے کے لئے بنیادی طریقوں سے آگاہ کیا۔ ینگ آرتھر ایوارڈ نوجوان مصنفین کے لئے ایک مشعلِ راہ ہے

citytv.pk

citytv.pk

اپنی رائے کا اظہار کریں