حیران کن ۔۔۔ بڑھ کر آپ بھی ششدر رہ جائیں گے

citytv.pk

 

دنیا بھر میں نت نئے اور انوکھے تجربے کرنے والے حضرات کی کمی نہیں،رواں برس 15 افرادنے دنیا کا پہلا اور انوکھا تجربہ کیا،جس کا تجربہ جدید اور آسائشات سے بھرپور اس دور میں ہر شخص کے لیے ممکن نہیںتھا۔اس انوکھے تجربے کے تحت 8 مردوں اور 7 عورتوں پر مشتمل ایک ٹیم نے40 دن بغیر موبائل فونز، گھڑیوں اور بغیر کسی ڈیوائس کے جنوبی افریقا میں واقع ایک غار میں گزارا۔ اس پراجیکٹ کو ”ڈیپ ٹائم ‘‘کا نام دیا گیا۔ یہ پراجیکٹ دراصل فرانس سے تعلق رکھنے والے فرانسکو سوئش کرسٹن کلور کا آئیڈیا تھا جو خود بھی اس تجربے کا حصہ تھے۔

فلپائن میں ایک 25 سالہ شہری کے سینے میں 4 انچ لمبی چھری موجود ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ جس کے باعث اسے سینے میں تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق 25 سالہ فلپائنی شہری کینٹ ریان کو سینے میں تکلیف کا سامنا ہوا جس پر ڈاکٹرز نے ان کا ایکسرے کرایا تو ان کے سینے میں 4 انچ لمبی چھری موجود ہونے کا انکشاف ہوا، جس کا دستہ موجود نہیں تھا۔ریان کے مطابق انہیں لگا تھا کہ انہیں سردی کی وجہ سے سینے میں درد کی شکایت ہے اور انہوں نے سوچا بھی نہیں تھا کہ ان کے سینے میں چھری موجود ہے۔ انہیں اندازہ نہیں کہ چھری ان کے سینے میں کیسے پہنچی تاہم ڈاکٹرز کے استفسار پر انہوں نے بتایا کہ گزشتہ برس موٹرسائیکل سواروں نے ان پر چھری سے وار کیا تھا ۔جس کے بعد انہیں ہسپتال منتقل کیا گیا تھا اور جب ان کی آنکھ کھلی تو ڈاکٹرز نے بتایا کہ بڑی مشکل سے ان کی جان بچائی گئی ہے۔

ضلع ازمیر کے ایک ہسپتال میں دلچسپ واقعہ پیش آیا جس میں بلی بیمار بچے کو علاج کے لیے منہ میں اٹھا کر ہسپتال لے آئی۔ ہسپتال کے کیمرے سے لی گئی فوٹیج میں دیکھاگیا کہ بلی اپنے بچے کو منہ میں اٹھا کر اسپتال کے دروازے سے اندر آتی ہے۔ دروازے پر کھڑے لوگ بلی کو راستہ دینے کے لیے ایک طرف ہو جاتے ہیں جب کہ کچھ لوگ دوسروں کو بلی کے لیے راستہ بنانے کا کہتے ہیں۔رپورٹ کے مطابق ڈاکٹرز نے جب بلی کے بچے کا معائنہ کیا تو معلوم ہوا کہ اس کی آنکھ میں انفیکشن ہے۔ بعد ازاں ڈاکٹرز کی جانب سے یہ کیس جانوروں کے ڈاکٹر کی طرف منتقل کر دیا گیا۔ ہسپتال کے عملے کی جانب سے ریکارڈ کی گئی ایک اور ویڈیو میں دیکھا گیاکہ بلی کے دو بچے موجود ہیں جس سے ڈاکٹر باتیں کر رہے ہوتے ہیں۔

تائیوان کی وزارتِ مردم شماری اور نام نے لوگوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ محض سوشی ڈش کھانے کے لیے اپنے نام میں ایک مشہور روغنی مچھلی ‘سامن‘ کا اضافہ سوچ سمجھ کر کریں کیونکہ یہ ایک جذباتی فیصلہ ہوسکتا ہے۔ 100 سے زائد افراد نے سرکے میں تر ٹھنڈے چاولوں، انڈے، سبزی اور سمندری جانداروں سے بنی رول نما ڈش ”سوشی‘‘ مفت میں کھانے کے لیے اپنا نام باقاعدہ طور پر تبدیل کروایا ، اس کا اندراج نامہ لیا اور اس کے بدلے سوشی کھائی ، جو ایک مہنگا کھانا بھی تصور کی جاتی ہے۔ دوسری جانب تائیوان کے سرکاری اداروں کو نام تبدیل کرنے کی سیکڑوں درخواستیں موصول ہوچکی ہیں۔

سردیوں میں بعض لوگوں کو پیر کی انگلیاں پھولنے کا عارضہ لاحق ہو جاتا ہے۔ جس شخص کو یہ کیفیت ہو تو وہ یہ ٹوٹکا اختیار کرے۔دو کلو پانی ایک پاؤ نیم کے پتے گرم کریں۔اس پانی میں 4 چمچ بھر کے نمک ڈالدیں۔ پانی کو اس قدر پکائیں کہ پانی ڈیڑھ کلو رہ جائے۔ اب پانی چولہے سے نیچے اتار دیں، پھر اسے کسی کھلے برتن میں ڈال دیں، جب نیم گرم پانی ہو جائے کہ نہ زیادہ گرم نہ زیادہ ٹھنڈا، تب متاثرہ پاؤں کو اس پانی میں 10 منٹ کے لیے ڈبوئے رکھیں۔بعدا ازاںپاؤں کو رضائی میں رکھیں۔آدھے گھنٹے کے بعد پاؤں رضائی سے باہر نکالیں گے توحیرت انگیز نتائج پائیں گے۔

ہم میں سے اکثر افراد چپس کھاتے ہوئے سوچتے ہیں کہ یہ پیکٹ تقریباً آدھا خالی کیوں ہوتا ہے اور آدھے سے زیادہ پیکٹ میں ہوا کیوں بھری گئی ہوتی ہے۔بعض اوقات ہم سوچتے ہیں کہ شاید یہ بھی صارفین کو لوٹنے کا ایک طریقہ ہے کہ بڑا پیکٹ دکھا کر زیادہ قیمت وصول کی جائے لیکن جب اسے کھولا جاتا ہے تو اس کی تہہ میں کہیں تھوڑے سے چپس نظر آجاتے ہیں۔اس حرکت کا مقصد دراصل صارفین کو بہترین شے پہنچانا ہوتا ہے۔چپس پیکٹ کے خالی حصے میں نائٹروجن گیس بھری جاتی ہے جس سے چپس محفوظ اور تازہ رہتے ہیں۔

نائٹروجن گیس کی عدم موجودگی میں آکسیجن پیکٹ میں آلو اور تیل کو خراب کرسکتی ہے۔پیکٹ میں ہوا بھری ہونے کی وجہ سے چپس ٹوٹنے سے بھی محفوظ رہتے ہیں اور آپ خستہ چپس کھا پاتے ہیں۔ایک اندازے کے مطابق ہر پیکٹ میں اوسطاً 43 فیصد ہوا بھری جاتی ہے۔ کچھ برانڈز یہ شرح اس سے کم یا اس سے زیادہ بھی کردیتے ۔

 

 

اپنی رائے کا اظہار کریں