بابا وانگا کی 2022میں ایشیائی ممالک سے متعلق تباہ کن پیشگوئیاں

citytv.pk

معروف نجومی خاتون بابا وانگا نے 2022 کے لئے ایشیائی ممالک سے متعلق تباہ کن واقعات کی پیش گوئیاں کردی ہیں۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق بلغاریہ کی مشہور خاتون آنجہانی نجومی بابا وانگا اپنی پیشگوئیوں سے متعلق دنیا بھر میں شہرت رکھتی ہے جبکہ آئندہ سال کے لئے کی گئی پیشگوئیوں نے ایک مرتبہ پھر خبروں میں جگہ بنالی ہے۔

بابا وانگا کے مطابق 2022 میں کئی ایشیائی ممالک اور آسٹریلیا سیلاب سے متاثر ہوں گے جبکہ ان کی پیش گوئی تھی کہ 2004 میں تھائی لینڈ کا سونامی، براک اوباما کا دور صدارت، سوویت یونین کا ٹوٹنا اور مشرقی اور مغربی جرمنی کا دوبارہ اتحاد ہوگا۔

یاد رہے کہ 2014 میں ایک قدیم وائرس سائبیرین پرما فراسٹ میں 30 ہزار سال تک غیر فعال رہنے کے بعد دوبارہ زندہ ہو گیا تھا۔

اس وائرس سے متعلق بابا وانگا نے پیش گوئی کی تھی کہ محققین کی ایک ٹیم سائبیریا میں ایک مہلک وائرس دریافت کرے گی جو اب تک منجمد ہے۔

آنجہانی نجومی خاتون کے چاہنے والوں کے مطابق انہوں نے بھی پیشگوئی کی کہ 2022 میں لوگ ٹیکنالوجی سے بہت زیادہ مانوس ہوجائیں گے اور موبائل فون کی اسکرینوں سے چپک جائیں گے جبکہ ایک پیش گوئی میں یہ بھی ہے کہ دنیا بھر کے بہت سے شہر 2022 میں پینے کے پانی کی قلت کا شکار ہوں گے۔

اس کے علاوہ بابا وانگا نے دعویٰ کیا تھا کہ ایک سیارچہ جسے ’اومواموا‘ کے نام سے جانا جاتا ہے زمین پر زندگی کی تلاش کے لیے ایلین بھیجے گا،زیادہ سے زیادہ سکرین ٹائم ایسا ماحول اور نفسیاتی خلل پیدا کرے گا کہ لوگ حقیقت اور قوت متخیلہ کے فرق میں تقریق نہیں کرسکیں گے اور جس کے خطرناک نتائج برآمد ہوں گے۔

واضح رہے کہ بلغاریہ کی زبان میں ’’بابا‘‘ دادی یا نانی کو کہا جاتا ہے اور یہ خاتون ایک حادثے میں نابینا ہوگئی تھی،بابا وانگا جنوری 1911ء میں بلغاریہ میں پیدا ہوئی تھی اور وہ ایک مشہور مذہبی پیشوا، جڑی بوٹیوں کی حکیم تھیں۔ ان کے متعلق مشہور تھا کہ وہ غیرمعمولی اور پراسرار صلاحیتوں کی مالک ہیں اور ان کے علاج سے بیمار ٹھیک ہوجاتے تھے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں