نیب ایگزیکٹو بورڈ نے 11 نئی انکوائریوں 2 انوایسٹی گیشنز کی منظوری دیدی 

اسلام آباد(نا مہ نگار)قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈکے اجلاس میں 11انکوائریز اور2 انوسٹی گیشنز کی منظوری دے دی گئی ہے، اجلاس میں سی ڈی اے کے افسران/ اہلکاران دیگر اورمحمد عمر ورک سابق سپرنٹنڈنٹ پولیس کے خلاف انکوائریز قانون کے مطابق بند کرنے کی منظوری دی گئی جبکہ آدم خان آٹو موبائلز پرائیویٹ لمیٹڈ اور دیگرکے خلاف شکایت آئی جی خیبر پختونخواہ کو قانون کے مطابق کاروائی کے لئے بھجوانے کی منظوری بھی دی گئی۔بدھ کو قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس قومی احتساب بیورو کے چئیرمین جسٹس جاوید اقبال کی زیرصدارت نیب ہیڈکوارٹر ز اسلام آبادمیں منعقد ہوا۔ ایگزیکٹو بورڈکے اجلاس میں 11انکوائریز کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں میسرز اے سی ای گروپ(اے سی ای مارکیٹنگ پرائیویٹ لمیٹڈ)، اے سی ای بلڈرز پرائیویٹ لمیٹڈ اور دیگر،یوٹیلیٹی سٹور کارپوریشنز کی انتظامیہ،پنجاب کوآپریٹو بورڈ آف لیکویڈ یشن کے افسران /اہلکاران اور دیگر، انجم پرویز سابق سینئر جنرل منیجر پاکستان ریلویز اور دیگر،وزرات ہاسنگ اور ورکس کے افسران /اہلکاران،اسٹیٹ آفس اور دیگر،شوکت مروت گروپ آف کمپنیز کے مالکان/ اسپانسرز،محکمہ جنگلات ہری پور کے افسران /اہلکاران اور دیگر،جاوید میمن،چیف انجینئر محکمہ آبپاشی لاڑکانہ اور دیگر،پروفیسر غلام اصغر چنا وائس چانسلر شہید محترمہ بے نظیر بھٹو میڈیکل یونیورسٹی لاڑکانہ اور دیگر، انجینئر سردار علی شاہ،پراجیکٹ ڈائریکٹر ر ائیٹ بینک آٹ فال ڈرین حیدر آباد سرکل اور دیگر اورپریتم داس،سپرنٹنڈنگ انجینئر،محکمہ آبپاشی،گورنمنٹ آف سندھ،، علی محمد کنٹریکٹر، اے ایم بی اینڈ کمپنی پرائیویٹ لمیٹڈاور دیگرکے خلاف انکوائریز کی منظوری دی گئی۔قومی احتساب بیورو کے ا یگزیکٹو بورڈکے اجلاس میں 2انوسٹی گیشنز کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں غلام حیدر جمالی،سابق انسپکٹر جنرل پولیس سندھ کراچی اور دیگر اور ڈسٹرکٹ ڈائریکٹرمحکمہ زراعت ڈی آئی خان کے افسران /اہلکاران اور دیگر کے خلاف انوسٹی گیشنزکی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں آدم خان آٹو موبائلز پرائیویٹ لمیٹڈ اور دیگرکے خلاف شکایت آئی جی خیبر پختونخواہ کو قانون کے مطابق کاروائی کے لئے بھجوانے کی منظوری دی گئی۔بورڈکے اجلاس میں سی ڈی اے کے افسران/اہلکاران اور دیگر اورمحمد عمر ورک سابق سپرنٹنڈنٹ پولیس کے خلاف انکوائریز قانون کے مطابق بند کرنے کی منظوری دی گئی۔قومی احتساب بیورو کے چئیرمین جسٹس جاوید اقبال نے کہا کہ نیب کا ایمان کرپشن فری پاکستا ن ہے۔ نیب احتساب سب کے لئے کی پالیسی پر قانون کے مطابق عمل پیرا ہے۔ انہو ں نے کہا کہ نیب ہمیشہ آئین اور قانون کیمطابق اپنے فرائض سرانجام دینے پر یقین رکھتا ہے۔ اس کا تعلق کسی سیاسی جماعت،گروہ اور فرد سے نہیں بلکہ صرف اور صرف ریاست پاکستان سے ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں