چیئرمین نیب کی تعیناتی، حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مشاورت کا آغاز

قومی احتساب بیورو کے چیئرمین کی تعیناتی کے لئے حکومت اور اپزیشن کے درمیان مشاورت کا آغاز ہوگیا ہے۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت اور اپوزیشن کی جانب سے مشترکہ طور پر فیصلہ کیا گیا ہے کہ ریٹائرڈ جج کی بجائے ریٹائرڈ بیورو کریٹ کو چیئرمین نیب لگایا جائے۔

ذرائع کے مطابق اس سلسلے میں وزیراعظم شہباز شریف اور اپوزیشن لیڈر راجہ ریاض کے درمیان ملاقاتوں کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ ابتدائی طور پر تین ناموں پر مشاورت کی گئی ہے جس کے مطابق سابق بیورو کریٹ فواد حسن فواد، سابق چیئرمین نیب قمر الزماں اور سابق ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن چیئرمین نیب کی دوڑ میں شامل ہیں جبکہ عرفان قادر شیخ کے نام پر بھی مشاورت کی گئی ہے۔

وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر کے درمیان ان ناموں پر اپنی اتحادی جماعتوں سے مشاورت پر اتفاق کیا گیا ہے۔

Advertisement

اس حوالے سے بول نیوز سے غیررسمی گفتگو کے درمیان اپوزیشن لیڈر راجہ ریاض کا کہنا تھا کہ دو جون سے پہلے چیئرمین نیب کا تقرر کرلیں گے تاہم ابھی کوئی نام فائنل نہیں ہوا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں