دنیا و آخرت کی فلاح ہی مسلمان کی زندگی کا مشن ہے، صائمہ افتخار

citytv.pk

 

کراچی (سٹی ٹی وی پاکستان ) نبی اکرم ﷺ  کے قائم کردہ مثالی نظام کی اتباع اور اس کے ذریعے دنیاوی و اخروی فلاح کا حصول ہی ایک مسلمان کی زندگی کا مشن ہے۔اسلام کو مکمل ضابطہ حیات مان کر زندگی کے ہر گوشے میں قرآن و سنت کا عملی نفاذ ہماری اولین ترجیح  رہی ہے۔ ہماری ساری منصوبہ بندیاں اور شعبہ جات کی پلاننگ اسی مقصد کی تکمیل کے لئے ہے۔

ان خیالات کا اظہار مرکزی نگران شعبہ نشرواشاعت صائمہ افتخار نے سالانہ رپورٹنگ اجلاس سے اپنے خطاب میں کیا۔انہوں نے کہا کہ الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا سے وابستہ خواتین سے قلبی لگاؤ پر مبنی تعلق قائم کریں۔ موجودہ دور میں میڈیا امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کا اہم ترین میدان ہے جو آج کل کے جدید دور کے تقاضوں کے مطابق جاذبیت کی صلاحیت بھی رکھتا ہے۔ہم سب کو غوروفکر کرنا ہے کہ محتاط انداز میں ہم میڈیا کے محاذ کو اپنی تحریک کے وسیع تر مفاد میں کیسے استعمال کریں۔

۔”اسوہ رسول ﷺ میں ابلاغ کی حکمتیں“کے عنوان پر تذکیری گفتگو کرتے ہوئے شعبہ الخدمت کی جنرل سیکرٹری اور رکن مرکزی شوری زرافشاں فرحین نے کہا کہ شریعت محمدی ﷺ کا نفاذ ہی وہ بنیادی مقصد ہے جس کے لئے لاکھوں قربانیوں کے بعد علیحدہ مملکت کا حصول ممکن بنایا۔ آج  ہمیں اسوہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے عملی نفاذ کے لئے ہر محاذ پر جدوجہد جاری رکھنے کی ضرورت ہے جس کے لئے ابلاغ کے جدید و قدیم تمام ذرائع کا استعمال ناگزیر ہے۔

نبی پاک صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے توسیع دعوت کے لئے ابلاغ کے ہر گوشے سے استفادہ کیا اور صحابہ کرام ؓ کو انہی حکمتوں پر عبور حاصل کرنے کے لئے دوردراز کے سفر پر روانہ فرمایا۔انہوں نے کہا کہ شعبہ نشرواشاعت جماعت اسلامی کے بیانیہ کا پلیٹ فارم ہے ِ شعبہ کے اراکین کو بہت متحرک،حالات حاضرہ سے فوری رسائی اور صورتحال کے فہم و ادراک جیسی صلاحیتوں سے اپنی ذات کو مزین کرنا لازم ہے۔

شعبے کے اجلاس میں صوبائی نشروشاعت کی سالانہ اہداف و رپورٹس کا جائزہ لیا گیا  بعد ازاں صوبہ جات کی نگراں نے اپنے اپنے صوبے میں نشروشاعت کے کام کے حوالے سے پلاننگ،مشکلات و مسائل پر سیر حاصل گفتگوکی اور ممکنہ حل پیش کیے گئے۔اجلاس میں شعبہ نشرواشاعت کے اراکین مشاورت نے بھی شرکت کی

 

اپنی رائے کا اظہار کریں