مقبوضہ کشمیر،بھارتی فوج نے ماہ جنوری میں 21افراد کو شہیدکیا

مسلسل 182 روزسے جاری فوجی محاصرے اور براڈ بینڈ انٹرنیٹ معطلی کے باعث وادی کے مکینوں کو سخت مشکلات سامنا ہے۔

0 76

مقبوضہ کشمیر،بھارتی فوج نے ماہ جنوری میں 21افراد کو شہیدکیا

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے ریاستی دہشت گردی کی جاری کارروائیوں کے دوران گزشتہ ماہ جنوری میں 21
بے گناہ افراد کو شہید کیا۔کشمیر میڈیا سروس کےمطابق پر امن مظاہرین پر پیلٹ گن ، گولیوں اورآنسوگیس سمیت طاقت کے وحشیانہ استعمال سے14افراد شدید زخمی ہوگئے ۔ 104شہریوں کو گرفتار کیاگیا۔ بھارتی فوج نے جنوری میں تین خواتین کی بےحرمتی کی اور پانچ مکانات کو نقصا ن پہنچایا۔
مسلسل 182 روزسے جاری فوجی محاصرے اور براڈ بینڈ انٹرنیٹ معطلی کے باعث وادی کے مکینوں کو سخت مشکلات سامنا ہے۔جموں وکشمیر مسلم خواتین مرکز کی چیئرپرسن یاسمین راجہ نے شہید وامق فاروق کی برسی پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیر کے نوجوان آزادی کے مقدس مقصد کی خاطر اپنی جانیں قربان کر رہے ہیں اور ان کی قربانیوں کو ہرگز رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا۔ وامق فاروق 31جنوری 2010کو سرینگر میں بھارتی پولیس کی طرف سے داغا جانے والا آنسوگیس کا گولہ سر میں لگنے کے باعث شہید ہو ئےتھے۔

 

سرینگر کی ایک عدالت نے غیر قانونی طور پر نظر بند اسلامی تنظیم آزادی کے چیئرمین عبدالصمد انقلابی کو 20فروری تک عدالتی ریمانڈ پر دیدیا ہے۔ہائیکورٹ بارایسوسی ایشن کے غیر قانونی طور پر نظربند صدر میاں عبدالقیوم کے وکیل ایڈووکیٹ ظفر احمد شاہ نے انکی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے ترجمان نے سرینگر سے جاری بیان میں میاں عبدالقیوم کی گرتی ہوئی صحت پر سخت تشویش ظاہر کی ہے۔ میاں عبدالقیوم بھارتی شہرآگرہ کی جیل میں سخت علیل ہیں اور بدھ کے روز انہیں دل کا دورہ بھی پڑا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.