لاہور میں سفاک باپ نے دو معذور بیٹیوں کو قتل کر کے خود کُشی کر لی

34 سالہ سعدیہ اور 30 سالہ اقصٰی نے موقع پر ہی دم توڑ دیا ۔ رپورٹ

0 7

لاہور میں ایک سفاک باپ نے اپنی دو معذور بیٹیوں کو قتل کرنے کے بعد خود اپنی زندگی کا بھی خاتمہ کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں ساندہ کے علاقہ راج گڑھ کے رہائشی ضیا نامی شخص نے اپنی 2 بیٹیوں کو چھریوں کے وار سے قتل کرنے کے بعد اپنے آپ کو بھی زخمی کرلیا۔ دونوں بیٹیاں موقع پر ہی جاں بحق ہوگئیں جب کہ ضیا کو زخمی حالت میں اسپتال لے جایا گیا لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستے میں ہی دم توڑ گیا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق پولیس کے مطابق ضیا کے ہاتھوں قتل ہونے والی دونوں بیٹیاں معذور تھیں۔ معذور بیٹیوں کی شناخت 34 سالہ سعدیہ اور 30 سالہ اقصٰی کے نام سے ہوئی۔ واقعہ کی وجوہات جاننے کے لیے تفتیش کا آغاز کر دیا گیا ہے۔
واضح رہے کہ کچھ عرصہ قبل ایسے ہی ایک سفاک باپ نے اپنے 5 بچوں کو نہر میں پھینک دیا تھا۔ پانچ بچوں کو نہر میں پھینکنے والے سنگدل باپ نے پولیس کو اپنے اعترافی بیان میں بتایا کہ دھکا دیتے وقت بچوں نے شور نہیں کیا، اگر وہ شور کرتے تو شاید مجھے ان پر ترس آ جاتا۔

ملزم نے بتایا کہ بیوی سے تلخ کلامی اور جھگڑے پر طیش میں آ گیا تھا، رشتہ داروں کے طعنوں نے یہ کام کرنے پر مجبور کیا، بچوں کی یاد ستاتی ہے، مجھ سے بڑا ظلم ہوا۔ قبل ازیں صوبہ پنجاب کے شہر گجرات میں غربت سے پریشان باپ چار بچوں سمیت نہر میں کود گیا تھا۔ شاویز نامی شخص نے 4 بچے موٹر سائیکل پر سوار کرکے موٹر سائیکل نہر میں گرا دی تھی۔ جبکہ رواں ماہ ہی راولپنڈی میں تھانہ نصیرآباد کے علاقے میں شوہرنے بیٹا نہ ہونے پربیوی اورکمسن بیٹی کوتشدد کرکے قتل کردیا تھا۔
اس قسم کے واقعات نے شہریوں کی تشویش میں اضافہ کر دیا ہے۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ سفاکیت سے بھرپور اس طرح کے واقعات معاشرے میں عدم برداشت کا واضح ثبوت ہے جس کے ہاتھوں مجبور ہو کر لوگ اپنوں کی زندگیوں کا خاتمہ کر کے خون سفید ہونے کا ثبوت دیتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.